بانی: عبداللہ بٹ      ایڈیٹرانچیف : عاقل جمال بٹ

بانی: عبداللہ بٹ

ایڈیٹرانچیف : عاقل جمال بٹ

چائلڈ لیبر کا خاتمہ بچوں کے روشن مستقبل کو یقینی بنانے کے لئے ناگزیر ہے ، اسپیکر قومی اسمبلی

اسلام آباد:اسپیکر قومی اسمبلی سردار ایاز صادق نے کہا ہے کہ چائلڈ لیبر کسی بھی صورت میں قابل قبول نہیں ہے۔ بچے اس ملک کا مستقبل ہیں اور کسی کو بھی ان کی صلاحیت، وقار اور حقوق سے محروم کرنے کی اجازت نہیں دی جاسکتی۔ پاکستان کی پارلیمنٹ بچوں کی مزدوری کے خاتمے کے لئے پرعزم ہے۔ انہوں نے یہ بھی کہا کہ بچوں کی مزدوری کا خاتمہ ان کے روشن مستقبل کو یقینی بنانے کے لئے ناگزیر ہے۔ انہوں نے ان خیالات کا اظہار چائلڈ لیبر کے خاتمے کے عالمی دن کے موقع پر کیا، جو ہر سال 12 جون کو منایا جاتا ہے۔

اسپیکر نے اپنے پیغام میں اس بات کی نشاندہی کی کہ چائلڈ لیبر ایک سنگین مسئلہ ہے جو عالمی سطح پر لاکھوں بچوں کی جسمانی اور ذہنی نشوونما کو نقصان پہنچا رہا ہے۔ انہوں نے تعلیم، سماجی تحفظ کے پروگراموں، اور بچوں کے لئے حفاظتی اقدامات میں سرمایہ کاری کی ضرورت پر زور دیا۔ انہوں نے چائلڈ لیبر کے بارے میں سول سوسائٹی، والدین اور اساتذہ کو عوام میں شعور اجاگر کرنے کی اہمیت پر بھی زور دیا۔ اسپیکر قومی اسمبلی سردار ایاز صادق نے بچوں کی مزدوری کی روک تھام اور بچوں کے حقوق کے فروغ کے لئے انتھک محنت کرنے والے تمام اسٹیک ہولڈرز کی کوششوں کی تعریف کی۔ انہوں نے تمام اسٹیک ہولڈرز پر زور دیا کہ وہ اپنی کوششیں جاری رکھیں اور بچوں کی مشقت کے خاتمے کے لئے اتفاق رائے سے کام کریں۔

اس موقع پر، ڈپٹی اسپیکر قومی اسمبلی سید میر غلام مصطفی شاہ نے کہا کہ چائلڈ لیبر ایک سنگین معاشرتی مسئلہ ہے جس پر فوری توجہ دینے کی ضرورت ہے۔ انہوں نے اس بات پر زور دیا کہ بچوں کو جبری مزدوری پر مجبور کرنے کے بجائے معیاری تعلیم اور محفوظ ماحول تک رسائی دی جانی چاہئے۔ انہوں نے یہ بھی زور دیا کہ حکومت اور سول سوسائٹی کو بچوں کی مزدوری کو ختم کرنے اور بچوں کو بنیادی حقوق کی فراہمی کو یقینی بنانے کیلئے سخت اقدامات اٹھانے کی ضرورت ہے ۔